پاکستان انٹرنیشنل پریس ایجنسی

سٹی تا اورنگی روٹ پرسرکلر ریلوے 15 دسمبر کے بعد چلائی جائے گی

سٹی تا اورنگی روٹ پرسرکلر ریلوے 15 دسمبر کے بعد چلائی جائے گی ٹریک کی بحالی مکمل کر لی گئی ہے تجاوزات ہٹا دی گئی ہیں کمشنر کو بریفنگ کمشنر کراچی کی زیر صدارت جائزہ اجلاس منعقد سرکلر ریلوے بحالی پر کام کاجائزہ لیا گیا سیکریٹری ٹرانسپورٹ، ڈویثرنل سپرینٹنڈنٹ ریلویز، متعلقہ ڈی سیز اور دیگر کی شرکت گیارہ لیول کراسنگز پر فلائی اوورز اور انڈر پاسز تعمیر ہوں گے سیکریٹری ٹرانسپورٹ شارق احمد
44 کلو میٹر روٹ کے اطراف فینسنگ کی تنصیب کے لئے اقدامات کئے جارہے ہیں
اردو کالج تا ڈپو اسٹیشن سیوریج لائن کی تنصیب کا کام شروع کر دیا گیا ہے کمشنر کو بریفنگ۔متعلقہ ادارے ترجیحی اور مربوط اقدامات کریں منصوبہ جلد از جلد مکمل کرنے کو یقنی بنائیں کمشنر کراچی کراچی ( )سپریم کورٹ کے احکامات کی روشنی میں کراچی سرکلر ریلوے کی بحالی کے سلسلہ میں سٹی اسٹیشن تا اورنگی تک کے سولہ کلو میٹر روٹ پر کام جاری ہے اس روٹ پر تمام تجاوزات ہٹادی گئی ہیں اور ٹریک بچھا دیا گیا ہے توقع ہے کہ اورنگی روٹ پر سرکلر ریلوے15دسمبر کے بعد چلائی جائے گی ۔ یہ بات کمشنر و ایڈمنسٹریٹر کراچی افتخار شالوانی کوان کی زیر صدارت منعقدہ ایک اجلاس میں بریفنگ کے دوران بتائی گئی ۔کمشنر کو بتا یا گیا کہ 44 کلو میٹر سرکلر ریلوے کی بحالی کے لئے اقدامات کئے جارہے ہیں جلد مکمل کر لئے جائیں گے ۔44 کلو میٹر ٹریک سے تمام تجاوزات ہٹا دی گئی ہیں ۔ ٹریک کی حالت بہتر بنانے اور مرمت کا کام جاری ہے ۔ 24 لیول کراسنگ میں سے گیا رہ لیول کراسنگ پر فلائی اوورز اور انڈر پاس تعمیر کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے جس پر کاررائی شروع کر دی گئی ہے ۔ ایف ڈبیلو او کے تعاون سے آٹھ انڈر پاسز اور تین فلائی اوور ز تعمیرکئے جائیں گے ۔اجلاس مین منصوبہ پر کام کی رفتار کا جائزہ لیا گیا فیصلہ کیا گیا کہ تمام متعلقہ ادارے ترجیحی اقدامات کرکے یقینی بنائیں گے کہ منصوبہ جلد از جلد مکمل ہو ۔ اجلاس میں سیکریٹری ٹرانسپورٹ شارق احمد ڈویثرنل سپرنٹنڈنٹ ریلویز ارشد سلا م خٹک ، ، میونسپل کمشنر بلدیہ عظمی سید صلاح الدین نے پروجیکٹ ڈائریکیٹر امیر علی داود پوتہ، ضلع وسطی، جنوبی اورغربی کے ڈپٹی کمشنرز، ماس ٹرانزٹ اتھارٹی کراچی اربن ٹرانسپورٹ کارپوریشن اور دیگر اداروں کے افسران نے شرکت کی ۔ کمشنر کوبتایا گیا کہ 14 کلو میٹر سٹی اسٹیشن تا اورنگی روٹ پر وزیر مینشن، لیاری، بلدیہ، منگھو پیر ، اور اورنگی اسٹیشن سرکلر ریلوے کے اسٹیشن ہوں گے ۔ کمشنر کو بتایا گیا کہ سرکلر ریلوے کے دونوں اطراف فینسنگ کی تنصیب کے منصوبہ پر کام جاری ہے ۔ واٹر بورڈ کی جانب سے اردو کالج تا ڈپو تک ریلوے ٹریک کی بحالی کے لئے سیوریج لائن کی تنصیب کاکام بھی شروع کر دیا گیا ہے۔
کمشنر نے پاکستان ریلویز، ٹرانسپورٹ ڈپارٹمنٹ ماس ٹرانزٹ اتھارٹی واٹر اینڈ سیوریج بورڈ ، بلدیہ عظمی اور ضلع انتظامیہ کو ہدایت کی ہے کہ وہ سپریم کورٹ کے احکامات کی روشنی میں اقدمات کریں۔ کراچی سرکلر ریلوے کی بحالی کے منصوبہ پر کام کی رفتار تیز کرنے میں اپنا بھرپور کردار اد کریں ترجیحی اور مربوط کوششیں کرکے تمام ضروریا ت منصوبہ کے مطابق پوری کریں اور حایل رکاوٹیں دور کریں

Leave A Reply

Your email address will not be published.