پاکستان انٹرنیشنل پریس ایجنسی

اسپیکر قومی اسمبلی نے سینیئر پارلیمنٹیرینز کونسل کے قیام کی منظوری دے دی۔

اسلام آباد(پی پی اے)اسپیکر قومی اسمبلی نے سینیئر پارلیمنٹیرینز کونسل کے قیام کی منظوری دے دی۔کونسل کی صدارت اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر کریں گے۔سینیئر پارلیمنٹیرینز کونسل کا نوٹیفیکیشن جاری کر دیا گیا۔کونسل میں پی ٹی آئی سے سید فخر امام، شفقت محمود، پرویز خٹک، جی ڈی اے سے ڈاکٹر فہمیدہ مرزا، اور ایم کیو ایم پاکستان سے ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی کونسل میں شامل

کونسل میں بلوچستان عوامی پارٹی سے خالد حسین مگسی، پاکستان مسلم لیگ سے طارق بشیر چیمہ، مسلم لیگ ن سے رانا تنویر حسین، سردار آیاز صادق اور چوہدری محمود بشیر ورک شامل۔پاکستان پیپلز پارٹی سے راجہ پرویز اشرف، آفتاب شعبان میرانی، متحدہ مجلس عمل پاکستان سے شاہدہ اختر علی، پلوچستان نیشنل پارٹی سے محمد اختر مینگل کونسل کا حصہ۔سیکریٹری قومی اسمبلی طاہر حسین کونسل کے سیکرٹری جبکہ قومی اسمبلی کا شعبہ قانون سازی کونسل کے سیکرٹریٹ کے فرائص سرانجام دیں گے۔کونسل کے 9 نکات پر مشتمل ٹی آو آرز جاری۔ٹی آؤ آرز کے مطابق سیاسی وابستگی سے بالا تر ہو کر باہمی احترام پر استوار پارلیمانی روایات کا فروغ۔پہلی مرتبہ پارلیمان کا حصہ بننے والے اور نوجوان ممبران اسمبلی کو پارلیمانی امور کو بہتر طور پر سمجھانے اور ایوان میں ہونے والی بحث کے معیار کو مذید بہتر بنانے کے لیے ان کی حوصلہ افزائی۔ایوان میں ایک دوسرے پر الزام تراشی اور جملہ بازی کے بجائے عوامی اہمیت کے حامل موضوعات پر بحث کی حوصلہ افزائی۔

قومی اسمبلی کے ایوان اور پارلیمنٹ ہاؤس کے احاطہ میں کسی بھی ناخوشگوار واقعات کی روک تھام۔سیاسی تفریق سے بالاتر ہو کر جمہوری اقدار کو برقرار رکھتے ہوئے چئیر کی طرف سے دی جانے والی رولنگز کی تکریم اور پابندی کو یقینی بنانا، ایوان میں نسلی، جنسی اور مذہبی بنیاد پر بولے جانے الفاظ اور نعرے بازی سے اجتناب کو یقینی بنانا۔درج بالا نکات پر عملدرآمد یقینی بنانے کے لیے چیئر کو معاونت فراہم کرنا۔اسپیکر قومی اسمبلی کی اپنی دانست میں کسی بھی معاملہ پر کونسل سے مشاورت کا آختیار.کونسل کو باہمی اتفاق رائے سے کسی اور اہمیت کے حامل معاملہ کو کونسل ٹی او آرز میں شامل کرنے کا اختیار۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.